Aaya Ramzan Ka Mahina Khalifa Chala Soo-e-Madina Lyrics in Urdu

آیا رمضان کا مہینہ قافلہ چلا سوئے مدینہ
مُجھے بھی دو اذن مدینہ آنے کی سرکار مدینہ

مُجھے نا آیا بلاوا کِتنی ہے دل میں تمنّا
کاش آقا میں دیکھ لیتا بہار رمضان مدینہ

میری قِسمت کو بھی خدارا تُم سجانا
حسنین کے صدقے میں دکھانا بار بار مدینہ

کہاں جاؤں کہاں دامن پساروں میں مالکِ مدینہ
آس لگائی ہم نے تمہارے در سے اے شہنشاہِ مدینہ

کہیں ایسا نہ ہو سینے میں دفن کر کے غم مدینہ
میں دُنیا سے چلا جاؤں بن دیکھے ہی مدینہ

غموں کے سیلاب میں ڈوبا جا رہا ہوں سلطانِ مدینہ
للہ امداد کو آؤ میری سرور مدینہ

اس سال ضرور مُجھ آسی کو سرکار بلانا
روزائے انور اور گنبدِ خضریٰ دکھانا

چمکا کر میری آنکھوں جلوہ دکھا دینا
دیکھ لوں آنکھ بھر کے تمکو شاہ مدینہ

دُنیا کی محبت دل سے نکل جائے آقائے مدینہ
راہِ چشمِ نم دل میں بس غمِ مدینہ

مانا کے نہیں قابل ہوں جو دیکھوں تمہارا مدینہ
پھِر لاؤں کہاں سے وہ اعمال میں سرکار مدینہ

نہیں جابر کے پاس کوئی زر جو دیکھے پیارا مدینہ
اتنا تو ہو کرم خوابوں میں اسے دکھا دو مدینہ

نہیں مال و زر تو کیا ہے میں غریب ہوں یہیں نا
میرے عشق مُجھکو لے چل مُجھے جانب مدینہ

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *